ٹیم سے ڈراپ کیے جانے کے بعد کرسٹیانو رونالڈو کا مؤقف بھی آگیا

ٹیم سے ڈراپ کیے جانے کے بعد کرسٹیانو رونالڈو کا مؤقف بھی آگیا دوحہ(مانیٹرنگ ڈیسک) پرتگال کے عالمی شہرت یافتہ فٹ بالر کرسٹیانو رونالڈو نے ٹیم سے ڈراپ کیے جانے کے باوجود سوئٹزرلینڈ کے خلاف فتح پر ٹیم کی ستائش کرکے افواہوں کو ختم کر دیا۔ میل آن لائن کے مطابق 37سالہ کرسٹیانو رونالڈو کو سوئٹزرلینڈ کے خلاف میچ میں ٹیم سے نکال دیا گیا تھا اور ان کی جگہ راموس کو ٹیم میں جگہ  دی گئی تھی۔  اس ٹیم نے سوئٹزرلینڈ کے 1گول کے جواب میں 6گول کیے۔ ان 6میں سے 3گول رونالڈو کی جگہ ٹیم میں آنے والی راموس نے کیے۔ اپنی ٹیم کی فتح پر رونالڈو کا کہنا تھا کہ ”ہمارا خواب زندہ ہے۔ ہماری ٹیم نوجوان کھلاڑیوں پر مشتمل ہے اور ٹیلنٹ سے بھرپور ہے، جو کسی بھی ٹیم کا مقابلہ کرنے کی صلاحیت رکھتی ہے۔“ دوسری طرف پری کوارٹر فائنل میں سوئٹزر لینڈ کے خلاف میچ سے نکالے جانے کے بعد رونالڈو بنچ پلیئرز کے ساتھ ٹریننگ میں شامل نہ ہوئے، جس سے کئی طرح کے افواہیں جنم لے رہی تھیں۔ ٹیم سے ڈراپ کرنے پر رونالڈو کی گرل فرینڈ جارجینا روڈریگز کی طرف سے بھی سخت ردعمل سامنے آیا تھا اور انہوں نے ٹیم انتظامیہ کے اس فیصلے کو سوشل میڈیا پر تنقید کا نشانہ بنایا تھا۔  جارجینا نے اپنے انسٹاگرام اکاﺅنٹ پر ایک پوسٹ میں لکھا کہ ”جب 11کھلاڑیوں نے ترانہ پڑھا تو سب کی نظریں آپ پر تھیں۔ کتنی شرم کی بات ہے کہ 90منٹ تک لوگ دنیا کے بہترین کھلاڑی کے کھیل سے لطف اندوز نہ ہو سکے۔اس کے باوجود مداح آپ کا نام لے لے کر چیختے رہے۔“واضح رہے کہ کرسٹیانو رونالڈو کو ٹیم سے ڈراپ کرنے پر ٹیم کے منیجر فرنینڈو سینٹوز کا کہنا ہے کہ ”یہ فیصلہ حکمت عملی تھا۔ اس کے سوا کچھ نہیں۔“ مزید : کھیل –
Source : https://dailypakistan.com.pk/08-Dec-2022/1518112

اپنا تبصرہ بھیجیں