فیفا ورلڈ کپ عالمی ادارہ صحت کے ماہرین نے نئی بیماری پھیلنے کا خدشہ ظاہر کردیا

فیفا ورلڈ کپ، عالمی ادارہ صحت کے ماہرین نے نئی بیماری پھیلنے کا خدشہ ظاہر … دوحہ(مانیٹرنگ ڈیسک) قطر میں جاری فیفا ورلڈ کپ 2022ءکے دوران کورونا وائرس سے زیادہ خطرناک بیماری پھیلنے کا خطرہ ظاہر کر دیاگیا۔ انڈیاٹائمز کے مطابق عالمی ادارہ صحت کے ماہرین کی طرف سے اس بیماری کو ’کیمل فلو‘ کا نام دیا گیا ہے جو کورونا وائرس کی فیملی سے ہی تعلق رکھتا ہے مگر اس سے بھی زیادہ جان لیوا وائر س ہے۔ اس حوالے سے ایک طبی جریدے میں تحقیقاتی رپورٹ شائع ہوئی ہے جس میں بتایا گیا ہے کہ ورلڈ کپ کے دوران نہ صرف قطر بلکہ اس کے ہمسایہ ممالک میں کئی طرح کے متعدی امراض پھیل سکتے ہیں، جن میں سے ایک کیمل فلو ہے۔ اس کے علاوہ کورونا وائرس، منکی پاکس، مرس اور دیگر امراض پھیلنے کا بھی خدشہ ہے کیونکہ لاکھوں لوگ ورلڈ کپ دیکھنے کے لیے قطر پہنچ چکے ہیں اور وہ اپنے ساتھ ان امراض کے وائرس بھی لا سکتے ہیں۔ عالمی ادارہ صحت کے ماہرین کی طرف سے قطر جانے والے لوگوں کو وہاں اونٹوں کو چھونے سے گریز کرنے کا مشورہ دیا گیا ہے۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ کیمل فلو میں شرح اموات ایک تہائی تک ہوتی ہے، جو کورونا وائرس سے کئی گنا زیادہ ہے۔ اس کے علاوہ فیفا ورلڈ کپ کی وجہ سے ’مرس‘ کے بھی مستقبل میں ایک عالمی وباءبننے کا خطرہ ہے۔ مزید : کھیل –
Source : https://dailypakistan.com.pk/30-Nov-2022/1514919

اپنا تبصرہ بھیجیں