نیب کیسز میں گرفتار ملزمان کی رہائی سے متعلق لاہور ہائیکورٹ کا بڑا فیصلہ آ گیا

نیب کیسز میں گرفتار ملزمان کی رہائی سے متعلق لاہور ہائیکورٹ کا بڑا فیصلہ آ … لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) لاہور ہائیکورٹ نے 50کروڑ سے کم نیب کیسز میں گرفتار 5ملزموں کی ضمانت منظور کرتے ہوئے رہائی کا حکم  جاری کر دیا ہے،فیصلے میں کہا گیا ہےکہ نیب ترمیم سے 50کروڑ سے کم کے کیسز میں احتساب عدالتوں کا دائرہ اختیار ختم ہو گیاہے ۔  تفصیلات کے مطابق لاہور ہائیکور ٹ میں نیب کیسز میں گرفتار ملزمان کی ضمانت سے متعلق درخواست پر 2 رکنی بینچ نے سماعت کی ،  سماعت کے دوران عدالت نے جیلوں میں قید ملزموں کو ضمانتوں کا فورم نہ دینے پر اظہار تشویش کیا اور کہا کہ  کسی کو بغیر قانون کسی کی آزادی پر قدغن لگانے کی اجازت نہیں دے سکتے۔  جسٹس مرزا وقاص رؤف ، جسٹس انوار حسین پر مشتمل بنچ نے دوران سماعت  ریمارکس دیئے کہ درخواست گزاروں کے پاس ریلیف کے لیے کوئی آپشن باقی نہیں رہا تھا، صرف ایک راستہ تھا کہ وہ جنت سے کچھ ہونے کا انتظار کریں، عدالت نے مزید کہا کہ  آئین پاکستان کے تحت زندگی اورآزادی ہر ایک کا بنیادی حق ہے، عدالتیں شہریوں کے بنیادی حقوق کی محافظ ہیں۔ لاہور ہائیکورٹ کے  فیصلے میں کہا گیا  ہے کہ نیب ترمیمی ایکٹ کے بعد کیس میں زیر حراست ملزموں کو ضمانت ملنا ان کا حق ہے ، ترمیم سے 50کروڑ سے کم کے کیسز میں احتساب عدالتوں کا دائرہ اختیار ختم ہو چکاجس کے بعد   احتساب عدالتیں 50کروڑ سے کم کے کیسز نیب کو واپس بھجوارہی ہیں، 50کروڑ سے کم کرپشن میں ملوث ملزموں کے پاس رہائی کیلئے فورم بھی موجود نہیں ۔ لاہور ہائیکورٹ بینچ نے 10صفحات پر مشتمل فیصلہ جاری کیا ہے، جس میں عدالت نے ہاؤسنگ سوسائٹی فراڈ کیس میں گرفتار 5ملزموں کی رہائی کا حکم  دیا ہے، عدالت نے ملزموں کو ایک ایک لاکھ مچلکوں کے عوض ضمانت پر رہا کرنے کا حکم دے دیا۔  مزید : اہم خبریں -قومی –
Source : https://dailypakistan.com.pk/30-Nov-2022/1514910

اپنا تبصرہ بھیجیں