شردھا قتل کیس لیکن بھارت کا ہی وہ کیس جس میں بیوی نے شوہر کے ٹکڑے کردیے تھے

شردھا قتل کیس، لیکن بھارت کا ہی وہ کیس جس میں بیوی نے شوہر کے ٹکڑے کردیے تھے نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارتی دارالحکومت نئی دہلی میں چند ہفتے قبل شردھا نامی لڑکی کو اس کے بوائے فرینڈ نے سفاکانہ طریقے سے قتل کرکے لاش کے ٹکڑے کر دیئے تھے۔ اسی سفاکانہ طریقے سے چند ماہ قبل نئی دہلی میں ایک مرد بھی اپنی بیوی کے ہاتھوں قتل ہوا تھا۔ اس گھناﺅنی واردات کو اس وقت تو زیادہ توجہ نہ مل سکی اور اس کی وجہ صاف ظاہر ہے۔ جب حقوق نسواں کے نام نہاد علمبرداروں نے شردھا کے قتل کو کچھ اور ہی رنگ دیا اور معاملہ پوری دنیا میں اچھالا گیا تو لوگوں نے بیوی کے ہاتھوں قتل ہونے والے اس آدمی کی بات بھی کرنی شروع کر دی۔ یہ آدمی نئی دہلی کے علاقے پانڈیو نگر کا رہائشی تھا جسے اس کی بیوی نے اپنے سوتیلے بیٹے کے ساتھ مل کر موت کے گھاٹ اتارا اور لاش کے 22ٹکڑے کرکے فریج میں رکھ دئیے۔ وہاں سے ٹکڑے نکال کر وہ شہر میں مختلف جگہوں پر لیجا کر پھینک رہے تھے۔ پولیس کو جب مختلف جگہوں سے لاش کے ٹکڑے ملے اور تحقیقات ہوئیں تو اس ماں بیٹے کو پکڑ لیا گیا۔ شردھا نامی لڑکی کے قتل کی لرزہ خیز واردات کے بعد پانڈیو نگر کے لوگ اس آدمی کی موت کے واقعے کو یاد کر رہے ہیں۔ 50سالہ سکندر سنگھ نامی علاقے کے پراپرٹی ڈیلر نے بتایا ہے کہ جب اس آدمی کو قتل کیا گیا تھا تو پولیس نے علاقے کے گھروں میں موجود ریفریجریٹرزکی بھی تلاشی لی تھی۔ پولیس میرے گھر بھی آئی تھی اور فریج کو اچھی طرح چیک کرنے کے بعد پوچھا تھا کہ گھر میں کوئی اور فریج تو نہیں ہے۔ رپورٹ کے مطابق پولیس نے پونم نامی ملزمہ نے یہ واردات اپنے سابق شوہر سے پیدا ہونے والے بیٹے دیپک کے ساتھ مل کر کی۔ پونم کو شبہ تھا کہ مقتول انجان داس نے اس کے زیور چوری کرکے فروخت کر دیئے ہیں اور رقم ریاست بہار میں اپنی پہلی بیوی کو بھجوا دی ہے۔ داس کے اپنی پہلی بیوی سے 8بجے تھے۔  مزید : بین الاقوامی –
Source : https://dailypakistan.com.pk/01-Dec-2022/1515322

اپنا تبصرہ بھیجیں